URDU NEWS

سہ ماہی معاشی اپ ڈیٹ و آؤٹ لک رپورٹ:وزارت خزانہ

اسلام آبادوزارت خزانہ نے اکتوبر 2023ء کی سہ ماہی معاشی اپ ڈیٹ و آؤٹ لک رپورٹ کا اجراء کر دیا ہے جس کے مطابق ایف بی آر ریونیو میں 17 فیصد اضافہ ہوا، نان ٹیکس ریونیو میں 47 فیصد، برآمدات میں 15.5 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا، زرمبادلہ کے ذخائر 26 اکتوبر کو بڑھ کر 14 ارب 60 کروڑ ڈالر سے تجاوز کر گئے۔ رپورٹ میں آنے والے مہینوں میں اقتصادی سرگرمیوں اور مجموعی طلب میں کمی کی وجہ سے درآمدی سکڑاؤ سے تجارتی توازن میں بہتری کی توقع ہے۔
وزارت خزانہ و اکانومک ایڈوائزر ونگ کی جانب سے جاری رپورٹ کے مطابق دنیا بھر میں روس،یوکرائن جنگ کی وجہ سے 2022ء میں شرح نمو 3.2 فیصد برقرار رہی، گیس کی قیمتوں میں عالمی سطح پر 4 گنا اضافہ ہوا۔ رپورٹ کے مطابق پاکستان میں گنے کی پیداوار میں 7.9 فیصد کمی ہوئی، چاول کی فصل 40.6 فیصد کم ہوئی، دالوں کی پیداوار میں 3 فیصد کمی، کپاس کی پیداوار میں 6 فیصد کمی واقع ہوئی، ٹریکٹرز کی پیداوار اور اس کی فروخت میں 36.2 فیصد کمی ہوئی، سیلاب اور دیگر وجوہات کی بناء پر ان شعبہ جات کے ساتھ ساتھ صنعتی شعبہ بھی دباؤ میں رہا، اکتوبر 2023ء کے دوران صنعتی شعبہ کی ترقی گزشتہ مالی سال کے اسی دورانیہ کے مقابلہ میں کم رہی، سی پی آئی افراط زر 25.1 فیصد رہا جس میں کمی دیکھنے میں آئی ہے، روپے کی قدر مستحکم ہوئی ہے، کرنٹ اکاؤنٹ بیلنس بہتر ہو رہا ہے،
یہ پیش رفت اس بات کی نشاندہی کرتی ہے کہ آنے والے دنوں میں اقتصادی سرگرمیاں مثبت اور مستقل رہیں گی، قلیل، وسط اور طویل المدتی پالیسیوں سے کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کم ہونے کی امید ہے اس میں اضافہ کے خطرہ کا بڑا عنصر سیلاب کے تباہ کن نتائج کے سدباب کیلئے ضروری درآمدات ہیں، مالیاتی شعبہ کیلئے تباہ کن سیلاب میں بحالی اور بڑے پیمانے پر اخراجات کی ضرورت کی وجہ سے مالیاتی استحکام کیلئے اہم چیلنج درپیش ہو گا۔
رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ہر شعبہ میں پیداواری صلاحیت بڑھانے کی ضرورت ہے، رواں مالی سال کی پہلی سہ ماہی کے دوران ٹیکس وصولی 17 فیصد اضافہ کے ساتھ 1633 ارب روپے سے زائد رہی،تجارتی خسارہ 0.9 فیصد رہا، بیرونی سرمایہ کاری میں اس دورانیہ کے دوران بھی نمایاں کمی واقع ہوئی، نجی کاروباری شعبہ میں قرض اس مدت کے دوران 99.7 ارب روپے رہا جبکہ گزشتہ سال اسی دورانیہ میں یہ قرض 177 ارب روپے سے زائد رہا، سرمایہ کاری قرضوں میں نمایاں اضافہ دیکھنے کو ملا۔