URDU NEWS

گندم اور آٹے کی فروخت سرکاری نرخوں پر یقینی بنانے کی مطالبے کی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع

گندم اور آٹے کی فروخت سرکاری نرخوں پر یقینی بنانے کی مطالبے کی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع،قرارداد مسلم لیگ (ن) کی رکن سمیرا کومل کی جانب سے جمع کرائی گئی۔آٹا چکی مالکان ایسوسی ایشن نے آٹا 80روپے کلو فروخت کرنے کا عندیہ دے دیا ہے۔ اس وقت شہر کے مختلف علاقوں میں چکی کا آٹا 70 سے 76 روپے میں فروخت ہو رہا ہے۔ گندم امپورٹ کر کے بھی مقامی غلہ منڈیوںمیں گندم کی قیمت کم نہیں ہوگی۔حکومت کی غلط پالیسیوں کے باعث آج بھی غلہ منڈیوں میں گندم 2000 سے 2200 روپے فی من میں فروخت کی جا رہی ہے۔جس کے باعث چکی کے آٹے کی قیمت میں بھی اضافہ ہو رہا ہے، اگر گندم کی قیمت میں کمی نہ آئی تو چکی کا آٹا 80 روپے فی کلو ہو جائے گا۔یہ ایوان حکومت سے مطالبہ کرتا ہے کہ گندم اور آٹے کے سر کاری نرخوں پر عملدرآمد یقینی بنایا جائے۔